زرینہ کے خط – 2

زرینہ کا دوسرا خط – زندگی کتنی جلدی بدل جاتی ہے، لوگ ہماری زندگیوں سےچلے جاتے ہیں۔ اس خط میں جہاں زرینہ اپنی روز مرہ زندگی کی باتیں کرتی ہے وہاں وہ افغانستان میں شروع ہونے والی جنگ پر افسردہ دکھائی دیتی ہے۔

سیدہ قدسیہ مشہدی

زرینہ کون ہے اور اس نے جو خط مجھے لکھے تھے، میں کیوں شئیر کر رہی ہوں؟ اگر آپ نہیں جانتے تو دیکھئیے یہ تعارفی قسط ۔


A crash course on Essentials of HRM

One comment

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.